لوڈ شیڈنگ کیخلاف مظاہرے

لوڈ شیڈنگ کے ستائے عوام سڑکوں پر نکل آئے، ملک میں جگہ جگہ مظاہرے، احتجاج، دینہ میدان جنگ، واپڈا اور پولیس کے دفاتر اور دو گاڑیاں نذر آتش، راولپنڈی میں تاجروں کی ریلی، تفصیل کے مطابق لوڈشیڈنگ کے ستائے عوام باغی ہوکر سڑکوں پر نکل آئے ہیں’ جگہ جگہ احتجاج سے ملک کے بیشتر اضلاع میدان جنگ کا منظر پیش کرنے لگے ہیں۔ ملک بھرمیں بجلی کی طلب ورسد میں فرق پانچ ہزار میگاواٹ سے تجاوز کرگیا۔ملک بھر میں بدترین غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ سے گھریلو اورصنعتی سرگرمیاں بری طرح متاثرہورہی ہیں۔پیپکو کے تمام تراعلانات کے باوجود بجلی کی پیداوار دس ہزارمیگاواٹ سے بڑھ نہیں سکی۔ پیپکو حکام کاکہناہے کہ بڑھتی ڈیمانڈکی وجہ سے یہ صورتحال پیش آرہی ہے ،تاہم اکیس اپریل تک کئی بند پاورپلانٹس کے دوبارہ چلنے سے ،شارٹ فال میں پندرہ سومیگاواٹ تک کمی آجائے گی اورحالات بہترہوجائیں گے۔دوسری جانب ملک بھر میں لوڈشیڈنگ کے خلاف احتجاج کا سلسلہ جاری ہے۔ مظاہرین نے احتجاج کے دوران حکومت کے خلاف نعرے لگائے اور وفاقی وزیر پانی و بجلی راجہ پرویز اشرف سے مستعفی ہونیکا مطالبہ کیا ہے۔راولپنڈی کے فوارہ چوک پر مشتعل مظاہرین نے ٹائر جلا کر روڈ بلاک کردیا۔مظاہرین نے گلے میں انرجی سیورز اور بلب لٹکائے ہوئے تھے۔فیصل آباد میں روزانہ بارہ سے پندرہ گھنٹے لوڈشیڈنگ کے خلاف مختلف علاقوں میں احتجاج کا سلسلہ جاری ہے۔شہر میں روزانہ 12سے15 گھنٹے لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے۔ادھر حیدر آباد کے بیش تر علاقوں میں بجلی کی عدم فراہمی پر لوگوں کا احتجاج کا سلسلہ جاری ہے۔ لوڈشیڈنگ سے فیصل آباد، گوجرانوالہ، سیالکوٹ اور دیگر صنعتی زونز میں مزدور بے روزگار ہونے لگے۔ سیالکوٹ، اٹک، لاہور اور ملک کے دیگر مختلف مقامات پر صارفین نے احتجاج کیا اورحکومت کے خلاف نعرے لگائے۔دوسری جانب دینہ سے نمائندہ اوصاف کے مطابق دینہ میں غیر اعلانیہ لو ڈ شیڈنگ کے خلاف پرامن احتجاج ایس ایچ او تھانہ صدر شہبازکی غیر زمہ دارانہ رویہ کی بناء پرپرتشددمظاہرے میں تبدیل ہوگیا،ہزاروں افرادکا ضلع جہلم کی تاریخ میں سب سے بڑااحتجاجی مظاہرہ،چارافرادکے پولیس مقابلہ میں ہلاک ہونے کی افواہ نے جلتی پر تیل کا کام کیا ،واپڈاکے دونوں دفاتر،15پولیس ، لارڈنذیر کی جانب سے بلدیہ دینہ کو تحفہ میں دی گئی فائریگیڈ،پولیس دفاتر،پولیس کی گاڑی نذرآتش ،جی ٹی روڈبلاک،پولیس کی ہوائی فائرنگ، شیلنگ کی نہتے عوام نے پرواہ کئے بغیر ملکی اثاثوں کو سرعام آگ لگادی، شیلنگ ،لاٹھی چارج سے درجنوں شدید زخمی، زخمیوں میں 10 پولیس اہلکار بھی شامل، کئی گرفتار ، دوکانوں کے اندر کھس کرپولیس کا عوام پر تشدد ، چھ گھنٹے جی ٹی روڈبلاک ،پوراشہر مکمل طورپر بند۔تفصیلات کے مطابق دینہ میں حالیہ غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ متواتر 6,6گھنٹے بند رہنے کی وجہ سے دینہ کی عوام نے ایک پر امن مظا ہرہ جی روڈ پر واپڈا کے خلاف کیا جس میں ہزاروں لوگوں نے شرکت کی اور واپڈا اور حکومت کے خلاف نعرے بازی کی گئی جس پر ڈی ایس پی جہلم طاہر بشیر اور ایس ایچ او صدر شہباز میں مذاکرات جاری تھے کہ ایس ایچ او محمد شہباز کی مبینہ ایما ء پر مظاہرین پر اندھا دھند فائرنگ اور شیلنگ شروع کر دی گئی دوکانوں میں گھس کر مظاہرین کو باہر نکال کر ان پر لاٹھی چارج شروع کردیاگیا جس پر عوام مشتعل ہوگئے اور آپے سے باہرہو کر پولیس پر پتھرائو شروع کر دیا اور پولیس نے 15کی بلڈنگ میں گھس کر جان بچائی مگر مشتعل عوام نے ریسکیو 15کی بلڈنگ ٫پولیس موبائل وین، پولیس وردیاں،اسلحہ،٫فائر بریگیڈ،تین مو ٹر سائیکل ٫تین ٹریکٹروں سمیت واپڈا کے دونوں دفاتر کو آگ لگا دی اسی دوران انچارج انوسٹی گیشن برانچ راجہ محمودحسین کو عوام نے گھیر کر شدید زدوکوب کیا اورزخمی کردیا۔ مظاہروں اورانتظامیہ کے طاقت کے استعمال پرمنگلا روڈ،مین بازار،ریلوے روڈ،مین چوک جی ٹی روڈ،داتا روڈ اورتمام کاروباری مارکیٹیں مکمل طورپر بند رہیں۔مظاہرین کی جانب سے مسلسل اشتعال میں آنے کی وجہ چارافرادکے پولیس کی جانب سے فائرنگ میں ہلاک ہونے کی افواہ بنی جسے کسی بھی طورپر کنٹرول نہیں کیا گیا اسی دوران مظاہرین کے گھیرے میں انچارج انوسٹی گیش محمودحسین آگئے جنہیں مظاہرین نے شدید تشددکا مظاہرہ بنایاجنہیں شدید زخمی حالت میں ہسپتال پہنچادیاگیا۔ دینہ تحصیل رپورٹر کے مطابق مشتعل عوام کو منتشر کرنے کے لیے ضلع جہلم کی پولیس کی نفری کم پڑگئی ۔عوام کو منتشرکرنے کیلئے ایلیٹ فورس کی مددلینا پڑی۔ ادھر مرکزی انجمن تاجران راولپنڈی نے گزشتہ روز فوارہ چوک میں وفاقی وزیر بجلی و پانی کا پتلااور ٹائرجلاکر شدید احتجاج کیا اور حکومت سے وفاقی وزیر برائے بجلی وپانی راجہ پرویز اشرف کو عہدے سے برطرف کرنے،ویلیو ایڈ ڈ ٹیکس کے نفا ظ کے مجو زہ فیصلے، لو ڈ شیڈنگ اور مہنگا ئی کے خاتمے کا مطالبہ کیاہے ۔لوڈ شیڈنگ کے معاملے پر راولپنڈی کی تاجر برادری تین حصوں میں بٹ گئی ہے ۔ راولپنڈی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور مرکزی انجمن تاجران (رجسٹرڈ) نے وفاقی وزیربجلی و پانی راجہ پرویز اشرف کی چیمبر میں آمد اور تاجروں کے مسائل کے حل کی یقین دہانی پر احتجاجی مظاہرے کا پروگرام منسوخ کر دیا تھا تاہم مرکزی انجمن تاجران شاہد غفور پراچہ گروپ نے مظاہرے کی کال واپس لینے سے انکار کر دیا تھا ۔ مظاہرے کے باعث اندورن شہر ٹریفک کا نظام درہم برہم ہو گیا ،مظاہرین نے پون گھنٹہ سڑک کو بلاک کیا جبکہ تاجروں نے پلے کارڈز اوربینرز اٹھار رکھے تھے جس پر رشوت خور بجلی وزیر کو برطرف کرو، جب تک بجلی بند رہے گی جنگ رہے گی جنگ رہے گی اور ویلیو ایڈڈ ٹیکس نا منظور نا منظور ،لو ٹا وزیر مردہ باد مر دہ با د، غیر اعلانیہ لو ڈ شیڈنگ کیخلاف نعرے درج تھے ۔ اس موقعہ پر تاجروں نے وفاقی وزیر بجلی راجہ پرویز اشرف کا پتلا جلایا اور ایک ہفتے کالٹی میٹم دیتے ہوئے اعلان کیا گیا کہ اگر لوڈشیڈنگ کا خاتمہ نہ ہوا تو ملک گیر سطح پر شٹر ڈائون کیا جائے گاجبکہ شیخ صدیق کی سربراہی میں چلنے والی مرکزی انجمن تا جران رجسٹرڈ نے تین مرحلوں میں احتجا جی مہم شروع کر نے کا دعوی کرتے ہوئے کہا کہ آغاز میں مرکزی انجمن تا جران کی جانب سے احتجاجی بینر آویزاں کیے جا ئیں گئے 21 اپریل کو ہڑتا لی کیمپ لگا یا جا ئے گا اور 5 مئی کو راولپنڈی سے احتجاجی ریلی نکا لی جا ئی گئی جس کے بعد ملک گیر شٹر ڈائون کیا جا ئے گا دوسری جانب شا ہد غفو ر پراچہ کے زیر سایہ مرکزی انجمن تا جران راولپنڈی نے ہفتے کے روز احتجاجی مظاہرے اور اگلے ہفتے کے دوران شٹر ڈائون کا اعلان کر رکھا ہے تیسری جا نب نو ید کنو ل کی زیر صدارت پیپلز ٹریڈرز سیل نے مجوزہ ویلیو ایڈڈ ٹیکس پر خاموشی اختیار کر تے ہو ئے احتجاجی بینروں مظاہروں اور شٹر ڈائون کو بلا جواز قرار دیا اور اعلان کیا کہ وہ اس حق میں ہیں اور نہ ہی حما یت کریں گے۔ دریں اثناء وفاقی وزیر پانی و بجلی راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ انہوں نے 8 سال میں لوڈ شیڈنگ ختم نہ ہونے کے حوالہ سے کوئی بیان نہیں دیا۔ ہفتہ کو قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے پانی و بجلی کے اجلاس میں انہوں نے خود سے منسوب بیان کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ روز راولپنڈی چیمبر آف کامرس میں انہوں نے ہر گز یہ نہیں کہا تھا کہ ملک سے بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا 8 سال تک خاتمہ نہیں ہو گا بلکہ انہوں نے کہا کہ تھا کہ ملک کے کوئلہ اور دیگر وسائل کو بروئے کار لا کر آئندہ آٹھ سالوں میں بجلی کی پیداوار خاطر خواہ حد تک بڑھ جائے گی۔ وفاقی وزیر پانی و بجلی راجہ پرویز اشرف نے ہفتہ کو قائمہ کمیٹی برائے پانی و بجلی کو بتایا کہ ملک بھر سے بجلی چوری میں ملوث 132 فیکٹریاں پکڑی گئی ہیں، ان کے خلاف بلاامتیاز کارروائی ہو گی، کوئی کتنا ہی بااثر کیوں نہ ہو اس کے ساتھ کسی قسم کی رعایت نہیں برتی جائے گی۔پاکستان الیکٹرک پاور کمپنی (پیپکو) کے ڈائریکٹر جنرل محمد خالد نے کہا ہے کہ رواں سال کے آخر تک ملک میں بجلی کی پیداوار میں3500 میگا واٹ اضافہ ہو جائے گا، رواں سال 10 آئی پی پیز سے 2067 میگاواٹ جبلہ 8 رینٹل پاور پلانٹس سے 1156 میگاواٹ بجلی حاصل ہو گی۔ ہفتہ کو یہاں قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے پانی و بجلی کو بریفنگ میں انہوں نے بتایا کہ سال 2005-06ء میں 1250 میگاواٹ، 2006-07ء میں 2546، 2007-08ء میں 4956 اور 2008-09ء میں 4200 میگاواٹ کا اوسطاً شارٹ فال تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت بھی بجلی کی قلت پانچ ہزار میگاواٹ سے زائد ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت ہماری بجلی کی پیداواری صلاحیت وہ ہے جو ہر سال فروری میں ہوتی ہے جبکہ مارچ میں ہمارے پاس طلب جون کے برابر رہی ۔ انہوں نے کہا کہ اپریل میں درجہ حرارت میں اضافہ کا 63 سالہ ریکارڈ ٹوٹا ہے۔ خشک سالی کے باعث دریا اور نہریں خشک ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 10 آئی پی پیز 2067 میگاواٹ بجلی رواں سال لائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ 8 رینٹل پاور جنریشن پلانٹس دسمبر تک پیداوار شروع کر دیں گے جن سے 1156 میگاواٹ بجلی حاصل ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ دسمبر تک ملک میں بجلی کی پیداوار میں 3500 میگاواٹ اضافہ ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ اٹک اور ایکس پاور جنریشن سے 1675 میگاواٹ بجلی حاصل ہو گی۔


لوڈ شیڈنگ پر عوام کے صبر کی داد دیتا ہوں ، نواز شریف

مسلم لیگ( ن) کے قائد میاں نواز شریف نے کہا کہ لوڈشیڈنگ کے مسئلے پر عوام کے صبر کو داد دیتاہو ں’ لوڈشیڈنگ ملک کا بہت بڑامسئلہ بن چکا ہے جس کی وجہ سے مسائل کا سامنا ہے’ لوڈشیڈنگ کے حل کے لئے سو ا دو سو سال میں ٹھوس اقدامات کے جاسکتے تھے’ ملک میں بہت سے اداروں نے اپنی حدود سے نکل کر کام کیا’ ہزارہ میں حالات قابو کرنے کی کوشش کی لیکن مفاد پرستوں نے جلتی پر تیل ڈالا’ بے نظیر بھٹو قتل کیس کے ابھی تک کئی سوالات جواب طلب ہیں’ یہ بات انہوں نے لاہور میں مسلم لیگ کے سابق ترجمان نادر چوہدری کی والدہ کے انتقال پر اظہار تعزیت کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہاکہ ان کی جماعت حکومت کے مثبت کام کی حمایت کرے گی اور ہر اس کام کی مخالفت کرے گی جس میں گڈ گورنس کی کمی اور کرپشن کی بو آتی ہو۔ حکومت سوا دو سال میں کئی عوامی مسائل حل کر سکتی تھی۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ نواز نے گڈ گورنس کے لئے اپنے کئی وزرا سے استعفے طلب کئے۔ حکومت کو ہزارہ کے واقعے کا نوٹس لینا چاہیے۔ سردار مہتاب عباسی جیسے ساتھیوں پر فخر ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اگر میری سیاست داو? پر لگتی ہے تو سو بار لگے پاکستان محفوظ رہنا چاہئے’میاں نوازشریف نے کہا کہ ہزارہ ڈویڑن میں حالات پر قابو پانے کی کوشش کی مگر مفاد پرست ٹولے نے اپنی سیاست چمکائی’ ملک میں گڈ گورننس کے لئے ایم این ایزاور ایم پی ایز کی قربانیاں دیں’ لوڈشیڈنگ کے باوجود بل وہی آتے ہیں’ لوڈشیڈنگ کے مسئلے پر عوام کے صبر کو داد دیتا ہوں’ لوڈشیڈنگ ملک کا بڑا مسئلہ بن گیا ہے’اگر صحیح طور پر کام ہوتا 70 فیصد بجلی کا مسئلہ حل ہو جاتا’ لوڈشیڈنگ کے باوجود بجلی کے بل وہی آتے ہیں’ لوڈشیڈنگ نے عوام کی زندگی اورکاروبار متاثر کیا’پاکستان عوام طویل لوڈشیڈنگ برداشت کرنے پر مجبور ہیں۔ لوڈشیڈنگ کے باعث ہر طبقہ متاثر ہو رہے ہیں’ لوڈشیڈنگ کے باوجود بل اتنے ہی آ رہے ہیں جتنے بجلی ہونے پر آتے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ ملک میں گڈگورننس کے لئے مسلم لیگ (ن) نے اپنے ایم این ایز اور ایم پی ایز کی قربانیاں دی ہیں۔ سردارمہتاب عباسی کا استعفیٰ موصول ہو گا تو پھر اس پر تبصرہ کروں گا۔ ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ بے نظیرقتل سے متعلق بہت سے سوالات تاحال جواب طلب ہیں۔ سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ بے نظیر بھٹو کی جائے شہادت کو جلد کیوں دھو دیا گیا اور پیپلزپارٹی حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ شہید محترمہ کے قاتلوں کو گرفتار کرے اور انصاف کے کٹہرے میں لے کر آئے۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s