پاکستانی زمین ’برائے فروخت

اس ڈیل میں فائدہ ہی فائدہ ہے: وفاقی وزیرِ سرمایہ کاری

حکومتِ پاکستان نےملک کی دس لاکھ ایکڑ زمین ایسے ممالک کو فروخت کرنے یا پٹے پر دینے کا فیصلہ کیا ہے جو اسے اپنے ملک کی خوراک کی ضروریات پورا کرنے کے لیے استعمال کریں گے۔

پاکستان کے سرکاری خبر رساں ادارے اے پی پی کے مطابق ملکی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے زرعی اجناس اور اشیائے خوردونوش درآمد کرنے والے متعدد عرب ممالک ترقی پذیر ممالک میں زرعی زمین کی تلاش میں ہیں اور انہوں نے اس پاکستانی پیشکش میں بھی دلچسپی ظاہر کی ہے۔

پاکستان کے وفاقی وزیرِ سرمایہ کاری وقار احمد خان نے اے پی پی کو بتایا کہ ’ہم پاکستان بھر سے دس لاکھ ایکڑ زمین ایسے سرمایہ کاروں کے سامنے پیش کر رہے ہیں جو اسے خریدنا چاہیں یا پھر طویل مدت کے لیے پٹے پر لینے کے خواہشمند ہیں‘۔ انہوں نے بتایا کہ اس سلسلے میں حکومتِ پاکستان اور سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور دیگر عرب ریاستوں کے درمیان بات چیت جاری ہے۔وقار احمد خان کا یہ بھی کہنا تھا کہ جلد ہی اس سلسلے میں معاہدوں پر دستخط متوقع ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ’ ہم پاکستان کو ایک کاروباری شکل دینا چاہتے ہیں اوریہ بھی چاہتے ہیں کہ ہم سرمایہ کاروں کو سیاسی تبدیلیوں کے نتیجے میں بدلنے والے حالات سے بھی تحفظ دے سکیں جو کہ ماضی میں کبھی بھی نہیں ہوا‘۔ وفاقی وزیر نے دعوٰی کیا کہ اس معاملے پر حکومت اور اپوزیشن میں اتفاقِ رائے پایا جاتا ہے اور پارلیمان ایسے منصوبوں کی منظوری تین ماہ میں دے دے گی۔اس سوال پر کہ اگر ایسے معاہدے طے پاتے ہیں تو مقامی کسانوں کے حقوق کے تحفظ کے لیے کیا اقدامات کیے گئے ہیں وقار احمد خان کا کہنا تھا کہ وہ تمام زمین جسے فروخت یا پٹے پر دیا جا رہا ہے اس وقت زیرِ استعمال نہیں۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ اس ڈیل کے نتیجے میں کسانوں کو اپنی پیداوار میں اضافے کے لیے نئی تکنیکوں سے آگاہی ہو گی اور اس ڈیل میں’فائدہ ہی فائدہ ہے‘

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s